تم بالکل ہم جیسے نکلے:فہمیدہ ریاض

تم بالکل ہم جیسے نکلے، اب تک کہاں چھپے تھے بھائی
وہ مورکھتا وہ گھامڑ پن جس میں ہم نے صدی گنوائی
آخر پہنچی دوار توہارے، ارے بدھائی بہت بدھائی
پریت دھرم کا ناچ رہا ہے قائم ہندو راج کرو گے؟
سارے الٹے کاج کرو گے؟
اپنا چمن تاراج کرو گے؟
تم بھی بیٹھے کرو گے سوچا، پوری ہے ویسی تیاری
کون ہے ہندو کون نہیں ہے، تم بھی کرو گے فتویٰ جاری؟
ہوگا کٹھن یہاں بھی جینا، دانتوں آجائے گا پسینہ
جیسی تیسی کٹا کرے گی، یہاں بھی سب کی سانس گھٹے گی
بھاڑ میں جائے شکشا وکشا، اب جاہل پن کے گن گانا
آگے گڑھا ہے یہ مت دیکھو، واپس لاؤ گیا زمانہ
مشق کرو تم آجائے گا، الٹے پاؤں چلتے جانا
دھیان نہ دوجا من میں آئے، بس پیچھے ہی نظر جمانا
ایک جاپ سا کرتے جاؤ، بارم بار یہی دہراؤ
کیسا ویر مہان تھا بھارت، کتنا عالی شان تھا بھارت
پھر تم لوگ پہنچ جاؤ گے، بس پرلوک پہنچ جاؤ گے
ہم تو ہیں پہلے سے وہاں پر، تم بھی سمے نکالتے رہنا
اب جس نرک میں جاؤ وہاں سے
چٹھی وٹھی ڈالتے رہنا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest