ڈاکٹر ذاکر حسین اسکول نے بنائی اپنی بین الا قوامی پہچان

سالانہ کھیل کود کے انعاماتی جلسے میں ڈاکٹر ذاکر حسین اسکول کی نمایاں کا رکردگی

آج مور خہ 14فروری بروزجمعرات کو دہلی اسپورٹس اینڈ کلچرل ایگزیکیٹیو بورڈ محکمئہ تعلیم کے زون۔5کا سالانہ تقسیم انعا مات کا جلسہ پر تبھا وکاس ودھیا لیہ گوتم پوری میں منعقد کیا گیا جس میں بطور مہما ن خصوصی و دہلی اسپورٹس اینڈ کلچرل ایگزیکیٹیو بورڈکے چیئرمین ڈاکٹر ایس ۔کے۔شرما کے ساتھ ساتھ شمال مشرقی ضلع کے ڈپٹی ڈاریکٹر ڈاکٹر نیرج ،مہمان اعزازی کے طورپر زون4- کے ڈپٹی ڈاریکٹرآف ایجوکیشن ڈاکٹر راجیو شرما اورزون 6- کے ڈپٹی ڈاریکٹرآف ایجوکیشن جناب وریندرمینا اوردیگر اہم مہمانوںنے شرکت کی۔اس موقعے پرڈاکٹر ایس ۔کے۔شرما نے اہم پیش رفت اور کارکردگی کی منا سبت سے گذشتہ سال کی رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ زون ۔5کے طلبا وطا لبا ت نے اسکول اور زون کا نام نہ صرف ریاستی سطح پر روشن کیا ہے بلکہ قومی اور بین اقوامی سطح پر بھی اپنے اسکول اور علاقے کو ایک مقام دلوایا ہے۔
انعامات تقسیم کرنے کے بعد ڈاکٹر ایس۔ کے۔ شرما نے بطور خاص ڈاکٹر ذاکر حسین میموریل سینئر سیکنڈری اسکول کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس اسکول کے بچوں نے تعلیم کے ساتھ ساتھ کھیل کود کے میدان میں بھی شاندار مظاہرہ کرتے ہوئے قومی اور بین الاقوامی سطح پر دہلی اور ملک کا نام روشن کیا ہے اور مجھے یہ کہتے ہوئے بڑی خوشی ہو رہی ہے کہ ڈاکٹر ذاکر حسین اسکول کے بچوں نے ساتوں چیمپئن شپ پر قبضہ کرکے اپنے اسکول کا نام روشن کیا ہے جو ہم تمام آفیسرس کے لئے فخر کی بات ہے۔اس موقع پر اسکول کے پرنسپل ڈاکٹر محمد معروف خان صاحب نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے اسکول کے طلبا و طالبات ،اُن کے والدین تمام اساتذہ ئکرام اور خاص طور سے شمیم حسن اور ریاست علی خان کو مبارکباد پیش کی اور اسی خوشی میں ایک پارٹی دینے کا اعلان کیا ۔
انعامات حاصل کرنے والے طلبا کی تفصیل اس طرح سے ہے:
امن ملک، ارمان خان اور اوناش کمار نے بین الاقوامی سطح پر پاکستان ،تھائی لینڈاور جورڈن میں جاکر باسکٹ بال میں ملک کی نمائندگی کی ۔
زونل اتھلیٹ میں 63 گولڈ میڈل،5 سلور میڈل اور 3 کانسا میڈل حاصل کیے۔انٹر زونل مقابلوں میں 14 گولڈ میڈل، 4 سلور میڈل اور 2 کانسا میڈل حاصل کیے۔ نیشنل اتھلٹکس کے مقابلوں میں 3 گولڈ میڈل ،13 سلور میڈل اور 3کانسا میڈل حاصل کیے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest