دہلی میں جیش محمد کا دہشت گرد گرفتار ، پلوامہ حملے کے ماسٹرمائنڈ کا قریبی تھا

پلوامہ حملے کے بعد دہلی پولیس کو ایک بڑی کامیابی ملی ہے۔ پولیس نے دہلی سے دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے ایک رکن سجاد خان کو گرفتار کر لیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے سے پہلے ہی سجاد بھاگ کر دہلی آ گیا تھا۔ لیکن وہ حملے کے ماسٹر مائنڈ مدثر کے رابطے میں تھا۔تفصیلات کے مطابق دہلی پولیس کی ایک اسپیشل سیل نے جیش محمد کے دہشت گرد سجاد خان کو گرفتار کیاہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ پلوامہ حملے کے ماسٹر مائنڈ مدثر کا قریبی اور معاون تھا۔ خیال رہے کہ 14 فروری کو پلوامہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں 40 سی آر پی ایف جوان شہید ہوگئے تھے ۔ اس حملے کی ذمہ داری پاکستان مقبوضہ کشمیر میں واقع جیش محمد تنظیم نے لی تھی ۔بعد میں ہندوستان کی طرف سے 26 فروری کو ائیر اسٹرائیک کی گئی تھی ، جس میں دعوی کیا گیا تھا کہ بالا کوٹ میں 300 دہشت گردوں کو مار گرایا گیا ۔
ذرائع کے مطابق سجاد خان جموں وکشمیر کا ہی رہنے والا ہے۔ اس پلوامہ میں سی آر پی ایف کی بس پر حملے کی سازش کی پوری جانکاری تھی۔ سجاد مسلسل پلواما حملے کے ماسٹر مائنڈ مدثر کے رابطہ میں تھا، جس نے حال ہی میں ایک انکاؤنٹر کے دوران مارا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest