شیرا بھیا کی قیادت میں منعقد ہواکانگریس کارکنان کااجلاس

کانگریس امیدوار کے باضابطہ اعلان سے قبل برھانپور کے آزادامیدوارٹھاکر سریندرسنگھ المعروف شیرابھیا کی قیادت میں کانگریس کی اے اوربی ٹیم کے کارکنان کاایک اجلاس آج 25مارچ 2019پیر کو سندھی بستی میں واقع حسینی میرج ہال میں منعقد ہوا، جس میں کھنڈوہ پارلیمانی حلقوں کے کانگریس سے لوک سبھا کے متوقع امیدوار ارون یادو سے جو کارکنان ناراض ہیں ،ان کارکنان نے اس اجلاس کو ٹھاکر سریندرسنگھ شیرابھیا کی طاقت کا مظاہرہ سے تعبیر کیاجارہاہے، اس اجلاس میں شیرابھیا نے پھر اپنی بات کو دہرایا اور دعویٰ کیاکہ کانگریس ارون یادو کوکسی بھی قیمت پر ٹکٹ نہیں دے گی ساتھ ہی کارکنان کی او رعوامی جذبات کے پس منظر میں ٹکٹ دینے کامطالبہ کیاگیا، شیرابھیا اس پارلیمانی حلقے سے ارون یادو کی کھلم کھلا مخالفت کررہے اور انہیں ٹکٹ نہیں دینے کامطالبہ کررہے ہیں ساتھ ہی وہ اپنی اہلیہ کو کھنڈوہ پارلیمانی سیٹ سے لڑانے کے خواہش مند ہیں، دراصل کانگریس کا ایک بڑا طبقہ ارون یادو کی قیادت میں اور ضلع کانگریس کمیٹی صدر اجے رگھوونشی کی قیادت میں کام کررہا ہے وہیں آزاد ایم ایل اے شیرابھیا کی قیادت میں کانگریس کی بی ٹیم کام کررہی ہے، چرچاہے کہ ایم ایل اے کے ٹکٹ میں ارون یادو اور ان کی ٹیم کے ذریعے شیرا بھیاکی مخالفت کابدلہ شیرابھیا اب اس روپ میں لے رہے ہیں ،وہیں کانگریس کمیٹی کے ضلع صدر اجے رگھوونشی نے ضلع انتظامیہ کو ایک مکتوب پیش کرکے کانگریس کے بینر کاغلط استعمال کرنے کی شکایت کرتے ہوئے اجلاس کے انعقاد سے قبل (اجازت دینے سے قبل )اس کی تصدیق کرنے کامطالبہ کیاہے، اس اجلاس سے کانگریس کے دوگروپوں کاگروہی تصادم پھر منظر عام پر آگیاہے، یہ الگ بات ہے کہ آج کے کانگریس کے اجلاس کو کس کی پشت پنا ہی حاصل ہے اور کس کے اشارے پر ہورہاہے ،لیکن کانگریس کے لوک سبھا کے امیدوار کے مفاد میں نہیں ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest