بنگالی مسجدکی زمین پر قابضین کے خلاف وقف بورڈ لیگا ایکشن

مسجد کمیٹی کی دعوت پر چیئرمین دہلی وقف بورڈ امانت اللہ خان کا دورہ،کمیٹی ممبران نے مسجد کے پلاٹ پردفعہ 54چلانے کی درخواست کی

نئی دہلی:آج دہلی وقف بورڈ کے چیئرمین امانت اللہ خان نے بنگالی مارکیٹ مسجد کادورہ کیاجہاں کمیٹی ممبران نے گلدستہ دیکر امانت اللہ خان کا استقبال کیااورانھیں مسجد کے ایک خالی پلاٹ کا معائنہ کرایا جس پر ایک سردار کے ذریعہ غیر قانونی قبضہ کرلیا گیا ہے ۔مسجد کے ذمہ داران نے پلاٹ کی موجودہ صورتحال سے چیئرمین دہلی وقف بورڈ کو واقف کراتے ہوئے اسے آزاد کرانے کی درخواست کی۔تفصیل کے مطابق امانت اللہ خان نے موقع پر لوگوں کی موجودگی میں مسجد سے متصل تقریبا 200گز کے پلاٹ کا تفصیلی معائنہ کیااور مسجد کمیٹی کی درخواست پر وقف بورڈ کی جانب سے جلد ایکشن لینے کا بھروسہ دلایا۔غورطلب ہے کہ بنگالی مسجد سے متصل مسجد کی ہی ایک اراضی ہے جو تقریبا 200گز ہے جس پر کافی سالوں سے ایک مقامی سردار نے قبضہ کر رکھا ہے۔اس پلاٹ پر مذکورہ سردار نے فیکٹری بھی لگالی تھی جسے این ڈی ایم سی نے خالی کرالیا تھا جس کے بعد سردار کورٹ چلاگیا تاہم وہاں سے بھی اسے ناکامی ہی ہاتھ لگی جبکہ یہ پوری جگہ بنگالی مسجد کے تحت آتی ہے اور گزٹ کے مطابق وقف ملکیت ہے اس لئے مسجد کمیٹی کے ممبران نے آپسی صلاح و مشورہ سے دہلی وقف بورڈ سے مداخلت کی اپیل کی اور مسجد کے پلاٹ کو قبضہ سے آزاد کرانے کی بورڈ چیئرمین امانت اللہ خان سے گزارش کی۔قبل ازیں امانت اللہ کے مسجد پہونچنے پر کمیٹی کے ممبران نے گلدستہ دیکر ان کا استقبال کیااور بنگالی مسجد اور پلاٹ سے متصل پوری معلومات سے امانت اللہ خان کو واقف کرایا۔مسجد کمیٹی کے ذمہ داران نے بورڈ چیئرمین سے مسجد میں نئے تعمیراتی کام اور تزئین کا ری کے لئے این او سی کی بھی درخواست کی جسے امانت اللہ اس موقع پر خان نے جلد مہیا کرانے کا یقین دلایا۔ اس موقع پر حافظ مطلوب اور حافظ جاوید بھی موجود تھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest