بابری مسجد ملکیت مقدمہ

مصالحتی کمیٹی کل اپنی رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کرسکتی ہے۔

نئی دہلی :بابری مسجد ملکیت تنازعہ معاملے میں سپریم کورٹ آف انڈیا میں کل ایک اہم سماعت ہونے جارہی ہے جس کے دوران ممکن ہیکہ مصالحتی کمیٹی اپنی رپورٹ عدالت میں پیش کریگی جس کے بعد عدالت اگلا لائحہ عمل تیار کریگی۔واضح رہے کہ گذشتہ سماعت پر اس معاملے کے ایک فریق گوپال سنگھ وشارد کی عرضی پر چیف جسٹس رنجن گگوئی کی سربراہی والی پانچ رکنی بینچ نے مصالحت کمیٹی کو ہدایت دی تھی کہ وہ 18/جولائی تک اپنی حتمی رپورٹ پیش کرے، چیف جسٹس رنجن گگوئی نے کہا تھاکہ عدالت پہلے مصالحت کمیٹی کی رپورٹ کا مطالعہ کریگی اور اگر عدالت یہ محسوس کرے گی کہ مصالحت کے تعلق سے کوئی امید افزاء پیش رفت نہیں ہوئی اوریہ کہ مصالحت سے اس مسئلہ کاحل نکلتاہوانہیں محسوس ہورہا ہے تو عدالت فیصلہ کریگی کہ آیا کب سے اس معاملے کی سماعت شروع ہوگی۔
عیاں رہے کہ بات چیت کے ذریعہ اس معاملہ کا حل نکالنے کے لئے سپریم کورٹ نے سابق جسٹس ایم خلیفۃ اللہ کی سربراہی میں ایک تین رکنی پینل قائم کیا تھا جس میں مذہبی گرو شری شری روی شنکر، اور سینئر ایڈوکیٹ شری رام پنچوشامل ہیں۔
اس معاملے کی فریق اول جمعیۃ علماء ہند کے دفتر سے موصولہ اطلاعات کے مطابق کل ساڑھے دس بجے صبح سپریم کورٹ کی پانچ رکنی بینچ اس معاملے کی سماعت کریگی نیز حسب سابق عدالت میں جمعیۃ علماء ہند کی جانب سے سینئر وکیل ڈاکٹر راجیو دھون، ایڈوکیٹ آن ریکارڈ اعجازمقبول و دیگر وکلاء موجود رہیں گے۔
فضل الرحمٰن
پریس سکریٹری جمعیۃ علماء ہند
989196113

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram