آسٹریلیا کے وزیراعظم اسکاٹ موریسن نے کہا

مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے بارے میں سوچ رہے ہیں

کینبرا: آسٹریلوی وزیراعظم اسکاٹ موریسن نے کہا ہے کہ ہم مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور آسٹریلوی سفارت خانہ تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے کا سوچ رہے ہیں۔غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکا کے بعد آسٹریلیا نے بھی مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے پر غور شروع کردیا۔
تفصیلات کے مطابق اسکاٹ موریسن کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا فلسطین اور اسرائیل کے مسئلے کے دو ریاستی حل کی حمایت کرتا ہے لیکن اس حل کے لئے کوئی خاطر خواہ کوشش نہیں کی گئی جب کہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ کابینہ کی مشاورت سے کیا گیا ہے۔واضح رہے ٹرمپ انتظامیہ پہلے ہی مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرکے اپنا سفارتخانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرچکی ہے جس کے خلاف فلسطین سمیت پوری دنیا میں احتجاج اور مظاہرے ہوئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *