فضائیہ کی سرجیکل اسٹرائیک پر انجمن اسلام میں جشن کا ماحول

پاکستان کے حکمرانوں کو پتہ لگ جانا چاہئیے کہ سارے ہندوستانی متحد ہیں:ظہیرقاضی

ممبئی:آج صبح سویرے ہندوستانی فضائیہ کے ذریعہ مقبوضہ کشمیر میں واقع دہشت گردوںکے کیمپوںکونشانہ بنائے جانے کے پیش نظرممبئی میں واقع تعلیمی ادارہ انجمن اسلام کے سی ایس ٹی کیمپس میں ایک جشن کا ماحول تھا ۔ یہاں پر واقع اداروں کے طلباء و طالبات نے بڑی تعداد میں جمع ہوکر ہندوستانی ائیرفورس کے جانباز سپاہیوں کی طرف سے پاکستان اور دہشت گرد تنظیموں کوجو منھ توڑ جواب دیا گیا ہے اس پر انتہائی خوشی کا اظہار کیا۔
انجمن کے ذمہ داران بھی اس موقع پر موجود تھے۔ انجمن کے ہر دلعزیز صدر ڈاکٹر ظہیر قاضی نے اس موقع پر ملک کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو یہ معلوم ہوجانا چاہیے کہ سارا ہندوستان ایک ہے، اور اگر وہ خود کو نہیں سدھارے گا تو اور بھی سخت جواب دیے جائیں گے۔ ہم ہر خطرے کا مقابلہ سینہ سپر ہوکر کریں گے، اور ہر قیمت پر دنیا سے دہشت گردی کو ختم کرکے ہی دم لیں گے۔
انجمن اسلام کے سی ای اوشبیہہ نے ڈاکٹر ظہیر قاضی نے ہندوستان کی آزادی کی تحریک میں انجمن اسلام کے شاندار ورثہ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ انجمن اسلام سیکولرازم اور ملک کی سا لمیت و یکجہتی کی روشن مثال ہے۔ ہمارا یہ فرض ہے کہ ہم ملک کی اس خوشی میں شانہ بشانہ شریک ہوں۔ اس موقع پر نائب صدر جناب مشتاق انتولے ،جناب عقیل حفیظ اور دیگرعہدایداران بھی شریک ہوئے۔ طلباء نے بڑی تعداد میں جوش و خروش کا مظاہرہ کیا اور ہندوستان زندہ باد اور جے ہند کے نعرے لگائے اور ترنگے جھنڈے لہرائے۔ اس موقع پر شاندار آتش بازی کا مظاہرہ ہوا، اور شیرینی تقسیم کی گئی۔
واضح رہے کہ مہاراشٹر اسمبلی میںبھی ہندوستانی افواج کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے ،اس کے حق میں ایک قرارداد متفقہ طورپر منظورکی گئی ۔اس موقع پر سبھی سیاسی پارٹیوں کے لیڈران نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے حکومت ہند کی ستائش کی اور یقین دلایا کہ وطن عزیز پر بُری نظررکھنے والوں کا یہی حشر ہوگا۔
دریں اثناء کانگریس کے راجیہ سبھا ممبرحسین دلوائی نے بھارتی جوانوں کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی جوانوں نے رات کے تین بجے دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کو چن چن کر تباہ کر دیا جو قابل ستائش ہے وہ مبارک باد کے مستحق ہیں ہم اس کامیاب حملہ پر بھارتی جوانوں کو سیلوٹ کرتے ہیں.انھوں نے کہا کہ ہندوستانی نوجوانوں کواگر موقع دیا گیا تو وہ بہت جلد بھارت کی دھرتی سے دہشت گردوں کا صفایا کر دینگے ۔
حسین دلوائی اگے کہا کہ ہندوستان کے نوجوان کی لاشوں پر کوئی بھی سیاست نہیں ہونی چاہیے بلکہ ہندوستان کا مفاد اور ہمارے نوجوانوں کی قربانیوں کو مد نظر نظر رکھنا چاہیے اور ہمارا مقصد صرف دہشت گردی کے خاتمے کا ہونا چاہیے یہ دیش کسی ایک پارٹی مذہب کا نہیں بلکہ ہندوستانیوں کا ہے ۔مذکورہ قراردار کو شیوسینا،کانگریس ،این سی پی ،سماج وادی پارٹی اور کسان ومزدور(پی ڈبلیوپی ) نے حمایت کی اور شیوسینا کے ممبرسبھاش سبنے نے کہا کہ اس حملہ کے بعد ہر ہندوستانی کو اپنا سینہ 56 انچ کا محسوس ہورہا ہے۔
این سی پی کے سنیئر لیڈر اجیت پوار نے کہا کہ تمام سیاسی پارٹیاںاس مسئلہ پر ایک ساتھ کھری ہیں اور ہم کسی ملک کو ہندوستان پر حملہ کی اجازت نہیں دیں گے۔جبکہ کانگریس کے سنیئر ایم ایل اے عارف نسیم خان اور سماج وادی پارٹی کے صدراور ایم ایل اے ابوعاصم اعظمی نے کہا کہ پاکستان کے دہشت گردانہ حملے سے ہندوستانیوںکا غصہ اور دردکم ہوگا۔ صرف اتنا ہی نہیں بلکہ پاکستان کے دو ٹکڑے کر دینا چاہیئے
ابو عاصم اعظمی نے ایوان میںترنگا لہرا کر فوج کو سلامی دی اورکہا کہ پاکستان کو اب سبق سکھانے کی ضرورت ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest