کشمیر پر مستقل پالیسی کی ضرورت ہے ،تاہم افسوس ہے کہ اس کو پیچھے چھوڑ دیاگیا:اویسی

رکن پارلیمنٹ او صدر مجلس اتحاد المسلمین بیرسٹر اسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ کشمیر میں حالات کو معمول پر لانے کے لیے بی جے پی اور کانگریس کے پاس کوئی ویثرن ،پالیسی نہیں ہے۔ انہوں نے حیدرآباد کے ایچ آئی سی سی میں تلنگانہ جاگرتی تنظیم کی جانب سے منعقدہ دو روزہ انٹرنیشنل یوتھ لیڈر شپ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کانگریس یا بی جے پی کے زیر قیادت مرکز ی حکومتوں نے مسائل سے گھری ریاست میں حالات کو معمول پر لانے کے لئے کچھ وقت انتظار کیا تاہم بعد ازاں کشمیر کے مسئلہ کو فراموش کردیاگیا۔ انہوں نے کہاکہ جب کشمیر میں کوئی مسئلہ ہو یا کشمیر میں حالات بگڑ جاتے ہیں تو دونوں جماعتیں اس پرردعمل ظاہر کرتی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کشمیر پر مستقل پالیسی کی ضرورت ہے تاہم افسوس اس بات کا ہے کہ اس کو پیچھے چھوڑ دیاگیا۔کشمیر کے نوجوانوں پرسوال کاجواب دیتے ہوئے صدر مجلس نے کہا کہ انہوں نے گزشتہ آٹھ برسوں میں پیلٹ گن کی شکل میں کئی نوجوانوں کی جانوں کے اتلاف کو دیکھا ہے اور آنکھوں کے علاج کے لئے مشہور حیدرآباد کے ایل وی پرساد آئی اسپتال میں کئی نوجوانوں کو علاج کرواتے ہوئے دیکھا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram