امریکی صدر ملک میں ایمرجنسی نافذ کرنے والے ہیں، وائٹ ہاؤس

واشنگٹن: اپوزیشن کی جانب سے میکسیکو کی سرحد پر دیوار کی تعمیر کی منظوری نہ دینے پر نالاں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ حکومتی شٹ ڈاؤن کے بعد اب ملک میں ایمرجنسی نافذ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ترجمان وائٹ ہاؤس کے مطابق امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ میکسیکو کی سرحدی دیوار کی فنڈنگ کے معاملے پر ایمرجنسی کا اعلان کرنے والے ہیں، ڈونالڈ ٹرمپ حکومتی شٹ ڈاؤن کو ختم کرنے کے لیے بارڈر سیکورٹی کے بل پر تو دستخط کر دیں گے تاہم اپنے مطالبے کو عملی جامہ پہنانے کے لیے وہ کانگریس کو کی منظوری کے بغیر دیوار کی تعمیر کے لیے فوجی فنڈز کا استعمال کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ میکسیکو کی سرحدی دیوار کی فنڈنگ کے معاملے ملک میں ایمرجنسی نافذ کرنے والے ہیں۔ خیال رہے ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارتی انتخابات کی مہم میں میکسیکو کی سرحد پر دیوار بنانے کا وعدہ کیا تھا تاہم وہ اب تک اس دیوار کے لیے فنڈ حاصل کرنے میں ناکام رہے ہیں۔دوسری جانب سینئر ڈیموکریٹس نے امریکی صدر کے اس فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ صدر ٹرمپ طاقت کا ناجائز استعمال کررہے ہیں۔ کانگرس کی جانب سے منظور شدہ بل امریکی صدر کے دیوار کی فنڈنگ سے متعلق مطالبات کو پورا نہیں کرتا تاہم اب اس کو قانون بنانے کے لیے صدر ٹرمپ کے دستخط ہونا باقی ہیں۔اس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ یہ واضح کرچکے ہیں کہ وہ کانگریس کی منظوری کے بغیر امریکا اور میکسیکو کی سرحد پر دیوار کی تعمیر کے لیے قومی ہنگامی صورت حال کا اعلان کر سکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest