قاضی عبدالستار کا انتقال۔۔ایک عہد کا خاتمہ

 

 

 

 

 

 

 

 

قاضی عبد الستار اس عہد کے مُنفرد قد آور اور مقبول ترین فکشن نگار تھے انھوں نے جو ادب تخلیق کیا اس کی تقلید میں دو نسلوں تک افسانے اور ناول لکھے جاتے رہے ہیں یہ ان کی خوش نصیبی ہے کہ زندگی میں ان کی بے حد پذیرائی ہوئی یہ ہم اُردو والوں کی بد نصیبی ہے کہ ہم فکشن کے ایک روشن مینار سے محروم ہو گئے لیکن قاضی صاحب کی تخلیقات ان کی کتابوں، رسائل و جرائد اور اخبارات میں ورق ورق روشن ہیں یہ روشنی ہم ایسے قارئین اور ادیبوں کو فیض پہنچاتی رہے گی – میرے خیال سے فکشن کا ایک سنہری دور ان کے چلے جانے سے ختم ہُوا یہ اختتام ایک طرح سے قاضی صاحب کی بازیاب کی شروعات ہے – مُجھے ذاتی طور پر بے حد افسوس ہے کہ اب میں ان کی کوئی نئی تحریر پڑھ نہیں سکوں گا اللہ قاضی عبد الستار کو غریقِ رحمت کرے اور متعلقین کو صبرِ جمیل عطا کرے -آمین –

اسلم چشتی (پونے) انڈیا

چیئرمین صدا ٹوڈے اُردو نیوز ویب پورٹل

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest