کیرالہ میں سیلاب: وزیراعظم سے مدد کی گُہار، ٹی وی پر رونے لگے ایم ایل اے

کہا: ہیلی کاپٹر بھیجئے، ورنہ پچاس ہزار لوگ مرجائیں گے!

کیرالہ: کیرالہ میں آج کل سیلاب اور موسلا دھار بارش نے تباہی مچا رکھی ہے۔ وہاں سیلاب کیمصیبت سے عوامی زندگی مفلوج ہوتی جارہی ہے۔ بارش اور سیلاب کی وجہ سے 16؍اگست کو چوبیس گھنٹے کے اندر تقریباً 106؍افراد کی موت کی خبر ہے۔ آکسیجن کی کمی اور ایندھن کی قلت سے بحران اور زیادہ ہوگیا ہے۔ اس کا اثر راحتی آپریشن پر پڑرہا ہے۔ پچھلے 8؍اگست سے اب تک صرف کیرالا میں پانی نے 173؍لوگوں کی جان لے لی ہے۔ کیرالاہ کے چیگننور میںحالت بیحد خراب ہے۔ بتادیں کہ بارش اور سیلاب سے29 مئی سے اب تک 324 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔اب تک کی 324 اموات میں سے 164 آٹھ اگست کے بعد ہوئی ہیں۔کیرالہ میں اب تک یہ سب سے بڑی راحت اور بچاؤ مہم ہے جس میں مختلف ایجنسیوں نے صرف جمعہ کو 82،442 افراد کی جان بچائی ہے۔ الوا سے 71،591، چلاكڑي سے 5،500، چیگنور سے 3،060، كٹاند سے 2،000 اور ترولا اور ارنملا سے 741 افراد کو بچایا گیا ہے۔
گزشتہ روز چیگنور کے ماکپا ایم ایل اے ساجی چییرین نے وزیراعظم نریندر مودی سے مدد کی اپیل کر کے ٹی وی اسٹوڈیو میں کہ رونے لگے۔ انہوں نے اپنے حلقہ کی حالت زار بتاتے ہوئے رونے لگے ، اور کہا کہ ’’پلیز مودی کو چاہیےکہ وہ ہمیں ہیلی کاپٹر دیں، ہمیں ہیلی کاپٹر چاہیے۔۔۔۔۔۔پلیز، پلیز۔۔۔۔ نہیں تو پچاس ہزار لوگ مارے جائیں گے۔ ہم لوگ نیوی سے پچھلے چار دنوں سے مدد مانگ رہے ہیں لیکن اب تک کوئی مدد نہیں پہنچی ہے۔ اب ایک واحد طریقہ ایئر لفٹ ہی رہ گیا ہے۔ پلیز، پلیز، پلیز۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest