جنوبی کشمیرمیں جاری مسلح تصادم، لشکر طیبہ کے 5 دہشت گرد ہلاک

سری نگر: جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیاں کے کلورہ نامی گاؤں میں جمعہ کی شام سے جاری مسلح تصادم میں اب تک پانچ جنگجو مارے جاچکے ہیں۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ایک جنگجو کی لاش گذشتہ شام جبکہ باقی چار جنگجوؤں کی لاشیں ہفتہ کی صبح برآمد کی گئیں۔ فوج کی چنار کور نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ایک ٹویٹ میں کہا ’آپریشن کلورہ شوپیاں۔ مزید چار جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔ اب تک پانچ جنگجوؤں کو ہلاک کیا جاچکا ہے۔ ہتھیار برآمد کئے گئے ہیں۔ آپریشن جاری ہے‘۔ ریاستی پولیس کے سربراہ ڈاکٹر شیش پال وید نے کہا ’کلورہ شوپیان میں مسلح تصادم کے مقام پر مزید چار جنگجوؤں کی لاشیں نظر آرہی ہیں۔ مارے گئے جنگجوؤں کی تعداد بڑھ کر پانچ ہوگئی ہے۔ یہ امن کے لازمی تھا‘۔ریاستی پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان مسلح تصادم جمعہ کی شام شروع ہوا۔ انہوں نے بتایا ’کلورہ شوپیاں میں موجود جنگجوؤں کے ایک گروپ کے بارے میں مصدقہ اطلاع ملی تھی۔طرفین کے مابین گذشتہ شام ہی مسلح تصادم چھڑ گیا۔ ابتدائی فائرنگ میں ایک جنگجو کو مارا گیا تھا۔ علاقہ میں سرچ آپریشن جاری ہے۔ سمجھا جارہا ہے کہ اس گروپ کا تعلق کالعدم جنگجو تنظیم لشکر طیبہ سے تھا‘۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest