بدل سکتا ہے رام لیلا میدان کا نام، اٹل بہاری واجپئی کے نام پر رکھنے کی تجویز

نئی دہلی: نام بدلنے کی تجویز جب ’نیمنگ‘ کمیٹی کے پاس آتا ہے تو نیمنگ کمیٹی ان لوگوں کو بھی بلاتی ہے جن لوگوں نے یہ تجویز دی ہے۔ ان سے اس کی وجہ پوچھی جاتی ہے اور تبادلہ خیال کے بعد اگر نیمنگ کمیٹی اس کو صحیح مانتی ہے یا پھر غوروخوض کے بعد وہ اس ہامی بھردیتی ہے تو پھر کمشنر سے رپورٹ مانگی جاتی ہے۔ کمشنر کی رپورٹ آنے کے بعد نیمنگ کمیٹی ایک بار پھر بیٹھتی ہے اور نام میں بدلائو کی اجازت دیتی ہے۔ بہتر ملک کے کئی بڑی تحریکوں کی گواہ دہلی کا رام لیلا میدان اب نئے نام سے جانا جاسکتا ہے۔ شمالی میونسپل کارپوریشن جلد ہی رام لیلا میدان کانام بدل کر اٹل بہاری واجپئی کے نام سے رکھنے کی تیاری میں ہے۔ اس سلسلے میں بی جے پی کے چار یا پانچ پارشدوں نے شمالی میونسپل کارپوریشن میں ایک تجویز بھی پیش کردی ہے۔ پارشدوں کی اس تجویز پر 30اگست کو ایوان میں چرچا ہوگا۔
آپ کو بتادیں کہ دہلی کے تاریخی رام لیلا میدان کا نام بدل کر سابق وزیر اعظم آنجہانی اٹل بہاری واجپئی کے نام پر رکھے جانے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔ شمالی دہلی میونسپل کارپوریشن میں حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لیڈروں کے مطابق رام لیلا میدان کا نام ‘اٹل بہاری واجپئی رام لیلا میدان رکھنے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے میں حتمی فیصلہ 30 اگست کو ہونے والے کارپویشن کے اجلاس میں کیاجا سکتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram